حضرت سیدنااسود بن یزید علیہ رحمۃ اللہ المجید NafseIslam | Spreading the true teaching of Quran & Sunnah

This Article Was Read By Users ( 1578 ) Times

Go To Previous Page Go To Main Articles Page



حضرت سیدنا علقمہ بن مرثد رحمۃاللہ تعالیٰ علیہ فرماتے ہیں:٭ حضرت سیدنااسود بن یزید علیہ رحمۃاللہ المجید عبادت وریاضت میں خوب کوشش فرماتے ۔بہت زیادہ مجاہدات کرتے ،بکثرت روزے رکھتے یہاں تک کہ آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کا رنگ سبزی مائل اور پیلا پڑگیا۔ آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ نے اسّی(80) حج کئے۔٭
حضرت سیدنا علقمہ بن قیسرحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ ان سے کہتے:٭آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کب تک اپنے جسم پر مشقت کرتے رہیں گے؟٭یہ سن کر آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ فرماتے: ٭میں اپنے جسم کے آرام وسکون کے لئے ہی تو یہ سب کچھ کر رہا ہو ں۔ ٭ پھرجب آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کے وصال کا وقت قریب آیا تو آپ رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ رونے لگے۔لوگو ں نے پوچھا:٭ حضور! یہ رونا کیسا ؟٭فرمایا : ٭میں کیوں نہ رو ؤں؟ کیا مجھ سے بھی زیادہ کوئی رونے کا حق دارہے ؟( پھر عاجزی کرتے ہوئے ارشاد فرمایا ) خد ا عزوجل کی قسم! اگر اللہ عزوجل نے مجھے بخش بھی دیا تب بھی مجھے اپنے گناہوں کی وجہ سے اللہ عزوجل سے حیا آتی رہے گی،اگر بندہ کوئی چھوٹے سے چھوٹا گناہ بھی کرلے اور اسے بخش بھی دیا جائے لیکن پھر بھی اسے اپنے گناہ پر شر مندگی ضرور رہے گی ۔٭
(اللہ عزوجل کی اُن پر رحمت ہو..اور.. اُن کے صدقے ہماری مغفرت ہو۔آمین بجاہ النبی صلی اللہ تعالی عليہ وسلم)