ماہِ ربیع الاول میں وقوع پذیرہونے والے بعض اہم واقعات NafseIslam | Spreading the true teaching of Quran & Sunnah
We are updating NafseIslam, so you might experience some issues. We are sorry for the incovenience caused.

This Article Was Read By Users ( 4404 ) Times

Go To Previous Page Go To Main Articles Page



ماہِ ربیع الاول میں وقوع پذیرہونے والے بعض اہم واقعات
از:صادق رضامصباحی،ممبئی

٭ ولادت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۱۲ ربیع الاول ۵۷۱ ء
٭سرکار صلی اللہ علیہ وسلم سفر مدینہ کیلئے غار ثور سے باہر تشریف لائے مع یارِ غارحضرت ابوبکرصدیق رضی اللہ تعالی عنہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔یکم ربیع الاول قبل ہجری
٭مدینہ منورہ تشریف آوری اور قیام حضرت کلثوم ابن ہدم کے مکان میں، بمقام قبا ء مدینہ منورہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔بروز پیر۸ یا ۱۲ ربیع الاول یکم ہجری
٭ مسجد \\\'\\\'قبا \\\'\\\'کی بنیاد محلہ بنی سالم، ۔۔۔۔۔۔یکم ہجری
٭ اونٹنی حضرت ابو ایوب انصاری رضی اللہ تعالی عنہ کے مکان پر بیٹھی جہاں آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے سات ماہ قیام فرمایا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔یکم ہجری
٭اذان کی ابتدا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یکم ہجری
٭۔غزوہ بنی نضیر ۔۔۔۔۔۔ ۴؍ ہجری
٭ ۔غزوہ دومۃ الجندل (نصرانی مشرکین لڑے بغیر فرار ہوگئے) ۔۔۔۔۔۔۵ہجری
٭ ۔مختلف ممالک اور ریاستوں کے فرمانرواؤں کو تبلیغی خطوط روانہ کئے گئے ۔۔۔۔۔۔ ۷ ہجری
٭قبائلِ تہامہ اسلام لائے ۔۔۔۔۔۔ ۸ہجری
٭سریہ اُسامہ بن زید روانگی اور توقف ۔۔۔۔۔۔ ۱۱ہجری
٭خلافت ابو بکر رضی اللہ تعالی عنہ ۔۔۔۔۔۔۱۱؍ہجری
٭۔۔قتل اسود بن کعب عنسی کذّاب ۔۔۔۔۔۔ ۱۱؍ہجری
٭ ۔(وصال) حضور علیہ الصلوٰۃ والسلام ۔۔۔۔۔۔ ۱۲ ربیع الاول ۱۱ھ بروز پیر، ۷ یا ۸ جون ۶۳۲ئ؁
٭فتح عراق ۔۔۔۔۔۔ ۱۲ ہجری
٭ فرارطلیحہ اسدی کذاب ۔۔۔۔۔۔ ۱۲ہجری
٭فتح دمشق ۔۔۔۔۔۔ ۱۴ہجری
٭وصال معاذ بن جبل رضی اللہ تعالی عنہ ۔۔۔۔۔۔ ۱۸ہجری
٭وفات ام المؤمنین زینب بنتِ جحش رضی اللہ تعالیٰ عنہا ۔۔۔۔۔۔ ۲۰ہجری
٭وفات ابو سفیان رضی اللہ تعالی عنہ ۔۔۔۔۔۔ ۳۱ہجری
٭وفات حضرت سلمان فارسی رضی اللہ تعالی عنہ ۔۔۔۔۔۔ ۳۶ہجری
٭تکمیل مدتِ خلافت علیٰ،امام حسن رضی اللہ تعالی عنہ کی خلافت سے دستبرداری اور حضرت امیر معاویہ رضی اللہ تعالی عنہ کی حکومت کا قیام ۔۔۔۔۔۔ ۴۱ہجری
٭تکمیل فتح کابل ۔۔۔۔۔۔ ۴۴ہجری
٭شہادت حضرت امام حسن رضی اللہ تعالی عنہ ۔۔۔۔۔۔ ۴۹ہجری
٭وفات سعید بن زید (عشرہ مبشرہ میں شامل ہیں) ۔۔۔۔۔۔ ۵۱ہجری
٭بغاوت مختار ثقفی ۔۔۔۔۔۔ ۶۳ہجری
٭یزید انتہائی تکلیف کے عالم میں مرگیا ۔۔۔۔۔۔ ۶۴ہجری
٭وفات ابی سعید الخدری رضی اللہ تعالی عنہ ۔۔۔۔۔۔ ۷۴ہجری
٭عراق میں بغاوت ۔۔۔۔۔۔ ۷۶ہجری
٭وفات قاضی شریح ۔۔۔۔۔۔ ۷۸ہجری
٭شہر واسط کی تعمیر ۔۔۔۔۔۔ ۸۲ہجری
٭وفات قاضی مدینہ طلحہ الزہری ۔۔۔۔۔۔ ۹۷ہجری
٭وصال تابعی فقیہہ حضرت عطا بن یسار ۔۔۔۔۔۔ ۱۰۳ہجری
٭وفات جریر ۔۔۔۔۔۔ ۱۰۵ہجری
٭جنگ موقان(بنو امیہ ہشام بن عبدالملک بن مروان کے دور حکومت میں لڑی گئی) ۔۔۔۔۔۔ ۱۰۸ہجری
٭وفات عمرو بن شعیب السہمی ۔۔۔۔۔۔ ۱۱۸ہجری
٭بسطام اللیثی کی بغاوت ۔۔۔۔۔۔ ۱۲۸ہجری
٭معتزلہ فرقہ کے بانی واصل بن عطاء کی موت ۔۔۔۔۔۔ ۱۳۱ہجری
٭وفات سلمہ بن دینار الاعرج ۔۔۔۔۔۔ ۱۴۰ہجری
٭وفات خالد بن الخداء ۔۔۔۔۔۔ ۱۴۲ہجری
٭فتنہ محمرہ و عبدالقہار ۔۔۔۔۔۔ ۱۶۲ہجری
٭عباسی فرمانروا مہدی نے زندیقیوں کے خلاف مہم شروع کی ۔۔۔۔۔۔ ۱۶۳ہجری
٭ہارون رشید کی فاتحانہ یلغار (زندیقیوں کے خلاف) ۔۔۔۔۔۔ ۱۶۵ہجری
٭مہدی نے مسجد حرام کی توسیع و تعمیر کا کام کیا ۔۔۔۔۔۔ ۱۶۶ھ؍۱۶۷ہجری
٭وفات عباسی فرمانروا ابو محمد موسیٰ بن المہدی الملقبہ ہادی ۔۔۔۔۔۔ ۱۷۰ہجری
٭تخت نشینی ابو جعفر ہارون الرشید بن مہدی بن منصور ۔۔۔۔۔۔ ۱۷۰ہجری
٭مملکت روم پر یلغار ۔۔۔۔۔۔ ربیع الاول تا شعبان۱۷۰ہجری
٭فتح ارض روم ہارون رشید کے زمانے میں ۔۔۔۔۔۔ ۱۷۶ہجری
٭وفات القاضی شریک الکوفی ۔۔۔۔۔۔ ۱۷۷ہجری
٭ترک خاقان کے مظالم ۔۔۔۔۔۔ ۱۸۳ہجری
٭وفات ابراہیم الاسلمی الفقیہ ۔۔۔۔۔۔ ۱۸۴ہجری
٭آل برامکہ کا قلع قمع ہارون رشید نے کیا ۔۔۔۔۔۔ ۱۸۷ہجری
٭قتل فضل الوزیر ۔۔۔۔۔۔ ۲۰۲ہجری
٭مامون الرشید نے بوران بنت حسین ابن سہل سے شادی کی اور اس شادی پر بے انتہا دولت خرچ کی ایک ماہ تک شادی کا جشن منایا گیا ۔۔۔۔۔۔ ۲۱۰ہجری
٭وفات معروف شاعر ابو العتاہیہ اللغوی ۔۔۔۔۔۔ ۲۱۱ہجری
٭وفات حافظ معاویہ الازدی ۔۔۔۔۔۔ ۲۱۴ہجری
٭شہادت محمد بن نوح العجلی ۔۔۔۔۔۔ ۲۱۸ہجری
٭وفات معروف تابعی بزرگ امام الاولیا حضرت محمد بشر حافی قدس سرہ، ۔۔۔۔۔۔ ۲۲۷ہجری
٭وفات المعتصم عباسی و خلافت الواثق باللہ ۔۔۔۔۔۔ ۲۲۷ھ؍۸۴۲ء
٭وفات حافظ ابو جعفر الجعفی ۔۔۔۔۔۔ ۲۲۹ہجری
٭وفات امیر عبداللہ بن ظاہر ۔۔۔۔۔۔ ۲۳۰ہجری
٭دمشق میں شدید زلزلہ متعدد جانوں کا اتلاف اور عمارات کا انہدام ۔۔۔۔۔۔ ۲۳۳ہجری
٭وفات ماہر علم الانساب مصعب بن عبداللہ الزبیری المالکی قدس سرہ، ۔۔۔۔۔۔ ۲۳۶ہجری
٭وفات ابو ثورالکلبی ۔۔۔۔۔۔ ۲۴۰ہجری
٭وفات تیسری صدی کے مجدد، پیکر استقامت و جرأت امام اہلسنت حضرت احمد بن حنبل علیہ الرحمہ ۔۔۔۔۔۔ ۲۴۱ہجری
٭ ایران میں زلزلہ و تباہی ۔۔۔۔۔۔ ۲۴۲ہجری
٭شہادت حضرت سیدنا امام حسن عسکری قدس سرہ، (آئمہ اہلِ بیت میں گیارہویں امام) ۔۔۔۔۔۔ ۲۶۰ہجری
٭وفات وزیر عباسی مملکت عبید اللہ بن خاقان ۔۔۔۔۔۔ ۲۶۳ہجری
٭وفات ابراہیم المزنی ۔۔۔۔۔۔ ۶۶۴ہجری
٭سلطنت عباسیہ کے بعض علاقوں پر زنگیوں کا قبضہ ۔۔۔۔۔۔ ۲۶۷ہجری
٭وفات احمد بن سیار مروزی ۔۔۔۔۔۔ ۲۶۸ہجری
٭ ٭ ٭وفات بکر بن سہل الدمیاطی ۔۔۔۔۔۔ ۲۸۹ہجری
٭قرامطہ اور فاطمیہ کے مظالم ۔۔۔۔۔۔ ۲۹۰ہجری
٭وفات ابو الحسن بن کسیان النحوی ۔۔۔۔۔۔ ۲۹۹ہجری
٭عبیداللہ المہدی کا مصر پر حملہ اور ناکامی ۔۔۔۔۔۔ ۳۰۲ہجری
٭وفات ابو بکر الخلال ۔۔۔۔۔۔ ۳۱۱ہجری
٭رومیوں سے جنگ ۔۔۔۔۔۔ ۳۱۵ہجری
٭وفات عبید اللہ المہدی ۔۔۔۔۔۔ ۳۲۲ہجری
٭وفات الراضی باللہ و خلافت ابراہیم المتقی باللہ العباسی ۔۔۔۔۔۔ ۳۲۹ہجری
٭وفات ابو علی الکتامی القرطبی ۔۔۔۔۔۔ ۳۳۱ہجری
٭وفات ابن ولاد النحوی ۔۔۔۔۔۔ ۳۳۲ہجری
٭وفات ابن درستویہ الفارسی ۔۔۔۔۔۔ ۳۴۷ہجری
٭وفات فقیہ حسان الاموی ۔۔۔۔۔۔ ۳۴۹ہجری
٭بغداد میں معزالدولہ کے مظالم ۔۔۔۔۔۔ ۳۵۱ہجری
٭وفات ابو القاسم خالد القرطبی ۔۔۔۔۔۔ ۳۵۲ہجری
٭قتل معزالدولہ ابن بویہ الدیلمی ۔۔۔۔۔۔ ۳۵۶ہجری
٭وفات ابو علی الحسن بن الخضرا ۔۔۔۔۔۔ ۳۶۱ہجری
٭وفات ابو اسحق بن رجاء ۔۔۔۔۔۔ ۳۶۴ہجری
٭وفات ابو بکر ابن القوطیہ ۔۔۔۔۔۔ ۳۶۷ہجری
٭فوجی انقلاب بغداد ۔۔۔۔۔۔ ۳۷۶ہجری
٭وفات ابو علی الفارسی ۔۔۔۔۔۔ ۳۷۷ہجری
٭وفات عباسی وزیر جعفر ابن الفرات ۔۔۔۔۔۔ ۳۹۱ہجری
٭وفات ابوالحسن الخفاف ۔۔۔۔۔۔ ۳۹۵ہجری
٭وفات ابو سعد بن الاسماعیلی ۔۔۔۔۔۔ ۳۹۶ہجری
٭فاطمینِ مصر نے کینسہ قما مہ مسمار کردیا ۔۔۔۔۔۔ ۳۹۸ہجری
٭معزولی اموی حکمران محمد المہدی و خلافت المستعین الاموی اندلس میں ۔۔۔۔۔۔ ۴۰۰ہجری
٭الحاکم الفاطمی نے بے پردہ عورتوں کو قتل کرایا، اور دریا میں ڈبو دیا ۔۔۔۔۔۔ ۴۰۵ہجری
٭وفات ابو بکر فورک ۔۔۔۔۔۔ ۴۰۶ہجری
٭قتل فخر الملک دیلمی ۔۔۔۔۔۔ ۴۰۷ہجری
٭قادر با اللہ العباسی نے محمود غزنوی کو خلعت بھجوائی ۔۔۔۔۔۔ ۴۰۸ہجری
٭سلطان محمود غزنوی نے خیر سگالی کا پیغام اپنے قاصد کے ذریعے قادر باللہ کو بھجوایا ۔۔۔۔۔۔ ۴۱۰ہجری